245

امریکہ کا ڈومور کا مطالبہ اب ہوا تمام، پالیسی تبدیل،افغانستان میں امن و استحکام کیلئے امریکہ پاکستان کے کردار کا اعتراف کرنے پر مجبور ہوگیا، حیرت انگیز انکشاف اور اعلان

اشنگٹن(مانیٹرنگ ڈیسک ) امریکی سینٹرل کمانڈ کےامیر جنرل جوزف ووٹل نے کہا کہ خطے میں امن واستحکام کیلئے پاکستان کا تعاون انتہائی قابل قدر ہے۔ تفصیلات کے مطابق واشنگٹن میں امریکی سینٹ کے کمانڈرجوزف ووٹل نے پریس بریفنگ کے دوران کہا کہ افغانستان میں امن کے عمل میں چھ ماہ میں بہت پیشرفت ہوئی ہے۔امریکی سینٹرل کمانڈ کے امیر جنرل جوزف ووٹل نے پاکستان کی مدد سے طالبان مذاکرات کی میزپر آئے، خطے کے امن واستحکام کے لیے پاکستان کا تعاون انتہائی قابل قدرہے۔امریکی سینٹرل کمانڈ کے سربراہ جنرل جوزف نے گزشتہ ماہ 9فروری کو سینیٹ کی مسلح افواج سے متعلق کمیٹی میں اپنے بیان میں کہا تھا

کہ امریکہ کی جنوبی ایشیا سے متعلق حکمت عملی میں یہ بات بھی شامل ہے کہ افغان امن سمجھوتے میں پاکستان کے مفادات کا خیال رکھا جائے۔رواں سال 18 جنوری کو امریکہ کے نمائندہ خصوصی زلمے خلیل زاد نے وفد کے ہمراہ وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کی تھی۔زلمے خلیل زاد نے عمران خان کو افغان امن ومصالحت کے سلسلے میں خطے کے دیگر ملکوں کی حمایت حاصل کرنے کے لیے اپنے دوروں کے بارے میں بتایا تھا۔اس موقع پر وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ افغان امن مذاکرات کے لیے حمایت جاری رکھیں گے۔اس طرح امریکا افغانستان میں امن واستحکام کیلئے پاکستان کے کردار کا اعتراف کرنے پر مجبور ہو گیا۔ امریکی سینٹرل کمانڈ کے سربراہ جنرل جوزف ووٹل کا کہنا ہے کہ خطے کے امن واستحکام کیلئے پاکستان کا تعاون قابل قدر ہے۔ تفصیلات کے مطابق واشنگٹن میں امریکی سینٹ کام کمانڈرجوزف ووٹل نے پریس بریفنگ کے دوران کہا کہ افغان امن عمل میں 6 ماہ میں بہت پیشرفت ہوئی ہے۔جنرل جوزف ووٹل پاکستان کی مدد سے طالبان مذاکرات کی میزپر آئے، خطے کے امن واستحکام کے لیے پاکستان کا تعاون قابل قدرہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں