76

افغانستان کا پاکستانیوں کیساتھ ابتر سلوک، افغان حکومت انڈیا کے نقش قدم پر چلنےلگی، متاثرین وزیرستان کوپاکستان واپسی سے روک دیا، متعدد پر وحشیانہ تشدد، کاغذات پھاڑ دیئے

کابل(ویب ڈیسک) پاکستان کےقریبی ملک افغانستان میں رہنے والے پاکستانی پناہ گزین متاثرین وزیرستان کو اپنے ملک واپس آنے سے روک لیا اور یہ کہتے ہوئے مختلف حیلے بہانوں سے انہیں تنگ کرنا شروع کردیا ہے۔افغانستان میں وزیرستان کے شہریوں اور متاثرین کے گرد گھیرا تنگ کردیا گیا ہے۔ 2 صوبوں پکتیا اور پکتیکا میں افغان فورسز نے پاکستان کیجانب سے متاثرین کی واپسی کیلئے بھیجے گئے فارم پھاڑ دیے ہیں اور فارم لے جانے والے افراد کو بھی شدید تشدد کا نشانہ بنایا ہے۔ خوست کے گولان متاثرین کیمپ میں شمالی وزیرستان کےمتاثرین پر کڑی نظر رکھی جارہی ہے۔پاکستانی شہریوں نے بتایا ہے کہ
پاک بھارت حالیہ کشیدگی کے بعد افغان فورسز کا رویہ انتہائی ظالمانہ ہے، ہم وزیرستان واپس جانا چاہتے ہیں مگر افغان فوج ہمارے راستے میں رکاوٹیں کھڑی کررہی ہیں۔ کابل خیل قوم کے عمائدین نے افغان حکومت سے اس معاملے کی تحقیقات کرنے اور انصاف فراہم کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ انہوں نے پاکستانی حکومت سے بھی معاملے میں مداخلت کی اپیل کی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں