99

ُپاکستان اور بھارت کے درمیان جنگ کے بادل اب بھی منڈلا رہے ہیں ترجمان پاک فوج نے اہم پیشگوئی کر دی،

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)پاک فوج کے ترجمان میجر جنرل آصف غفور نے کہا کہ پاک بھارت کشیدگی میں کمی کے باوجو د جھنگ کے بادل ابھی بھی منڈلا رہے ہیں‌اور جھنگ کا خطرہ ابھی ٹلا نہیں تاہم اب بال انڈیا کے کو ٹ میں ہے کہ بھارت کشیدگی کم کرنے کے لیے کیا اقداما ت کرتا ہے،خطے میں کشیدگی کم کرنے کے لیے کشمیر کے مسئلہ کا حل نا گزیر ہے ،انڈیا نے پا کستان کی فضائی حدود کی خلا ف ورزی کر کے جا رحیت کا مظاہر ہ کیا جس کا جو اب پا کستان نےبھرپور انداز سے دیا ۔ ہم نے بھا رتی پا ئلٹ ابھی نندن کو

رہا کر کے امن اور خیرسگالی کا پیغام دیا،کشمیر کے علاقہ پلوامہ حملے میں پاکستان کا ہاتھ نہ ہو نے کے باوجو د بھی وزیراعظم عمران خان نے تحقیقات کی پیشکش کی اورانڈین ڈوزیئر پر تحقیقا ت تیزی سے جا ری ہیں ۔ امریکی نشریاتی ادارے کو انٹرویو دیتے ہو ئے پاک فوج کے ترجمان میجر جنر ل آصف غفور نے کہا کہ پاک بھارت کشیدگی میں کمی ہوئی ہے تاہم ابھی بھی خطرہ موجود ہے خطے میں کشیدگی کم کرنے کے لیے مسئلہ کشمیر کا حل اہم ہے انڈیا نے پاکستان کی فضائی حدود کی خلاف ورزی کی ہندوستانی جارحیت کا پاکستان نے بھرپورطریقے سے جواب دیاانڈین جارحیت کے باعث دونوں ممالک جنگ کے قریب تھے مگر ہم نے امن کا دامن ہا تھ سے نہ چھو ڑا اب انڈیا پر منحصر ہے کہ کشیدگی کم کرنے کے لیے کیا کرتا ہے گیند انڈیا کی کو رٹ میں ہے ہم نے ہندوستانی ہواباز ابھینند ن کو رہا کر کے امن کا پیغام دیا ،اگر انڈین جارحیت جاری رہی تو خطے میں امن کو خطرہ ہو گا دوسروں پر الزام لگانے سے بہتر ہے انڈیا اپنا گھر درست کرنے کے اقدامات کرے ۔26سے 28 فروری تک پاکستان اور ہندوستان کے مابین بہت تناؤ رہا پاکستان اور ہندوستان‌ کے درمیان ہاٹ لائن پر رابطہ نہیں ہو سکا،لائن آف کنٹرول پر انڈیا کی جانب سے اشتعال انگیزی جاری ہے پاکستان نہیں چاہتا کہ خطے کا امن متاثر ہو لیکن افواج پاکستان بھارتی جارحیت کا جواب دینے کے لیےہر دم ہر وقت تیار ہے۔ انہو ں نے انڈیا کے الزامات کی تردید کرتے ہوئے کہا کہ پلوامہ حملے میں پاکستان کا کوئی ہاتھ نہیں تھا لیکن اس کے باوجود پاکستان کے وزیراعظم عمران خان نے تحقیقات کی پیشکش کی ابانڈیا کی جانب سے ڈوزئیر ملا اور اس پر تحقیقات جاری ہیں۔ترجمان پاک فوج میجر جنرل آصف غفور کا مقبوضہ کشمیر سے متعلق گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ ہندوستانی فوج خو اتین کی عصمت دری کر رہی ہیں جبکہ کشمیری نوجوانوں کو بیلٹ گن سے اندھا کیا جا رہا ہے کشمیریوں پر مظالم جاری رہے تو اس کا رد عمل بھی آئے گا۔مقبوضہ کشمیر میں مظالم کی میری بات ذاتی نہیں بلکہ یو این رپورٹ ہے۔ایک سوال کے جو اب میں انہو ں نے کہا کہ خطے میں کشمیر بنیا دی تنا زع ہے امن مسئلے کا واحد حل ہے.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں