54

ہندوستان پلوامہ واقعہ پاکستان پر کیون سونپ رہا ہے؟ شاہ محمود قریشی نے جرمن وزیرخارجہ کو تمام حقائق بتا دیئے

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان اور جرمنی نے2 طرفہ اقتصادی،تجارتی اور ثقافتی تعاون سمیت سرمایہ کاری میں فروغ پر اتفاق کیا ہے منگل کے روز جرمنی کے وزیر خارجہ ہائیکو ماس نےپاکستانی وزارتِ خارجہ میں وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی سے ملاقات کی ۔ ملاقات میں دو طرفہ تعلقات، خطے میں امن و امان کی صورتحال اور افغانستان میں قیام امن سمیت مختلف امور پر تبادلہ خیال کیا ۔ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے پلوامہ واقعہ کے بعد بھارت کیطرف سے دراندازی اور اس کے نتیجے میں خطے میں امن

و امان کی کشیدہ صورتحال سے آگاہ کیا۔وزیر خارجہ نے کہا کہ پاکستان خطے میں امن کا خواہاں ہے یہی وجہ ہے کہ ہندوستانی جارحیت کے باوجود وزیر اعظم عمران خان نے جذبہ خیر سگالی کے تحت ہندوستانی پائلیٹ کو انڈیا کے حوالے کیا ۔جرمن وزیر خارجہ کی طرف سے دونوں ممالک کو اپنے معاملات بذریعہ مذاکرات حل کرنے پر زور دیا گیا ۔ انہوں نے کہاکہ ہم افغانستان میں قیام امن کے لئے پاکستان کی خدمات کو قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں ۔ ملاقات میں دونوں وزرائے خارجہ نے دو-طرفہ تجارتی، اقتصادی اور ثقافتی تعاون اور سرمایہ کاری میں فروغ پر اتفاق کیا ۔ قبل ازیں جرمنی کے وزیر خارجہ ہائیکو ماس پاکستان پہنچے تو نور خان ائیر بیس پہنچے پر وزارت خارجہ کے اعلیٰ حکام نے جرمن وزیر خارجہ کا خیر مقدم کیا۔ بعد ازاں وزارت خارجہ پہنچنے پر وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے جرمن وزیر خارجہ کا خیر مقدم کیا۔

Facebook Comments

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں