329

پلوامہ حملے کے بعد پاکستان اور بھارت کے درمیان کشیدگی، پاکستان آئ اس آئ چیف کو ٹیلیفون پر دھمکیاں، تہلکہ خیز انکشافات

اسلام آباد(ویب ڈیسک) کشمیر میں پلوامہ حملے کے بعد پاکستان اور انڈیا جنگ کے دہانے پرہیں ،ہندوستان کیجانب سے پاکستانی سرحدی خلاف ورزی کے بعد پاکستان کے بھرپور ردعمل نے مودی سرکار کے اوسان خطا کر دئیے،موجودہ کشیدگی کید وران دونوں ممالک نے ایک دوسرے کو میزائل حملوں کی دھمکیاں بھی دے دی تھیں۔لیکن اس نئی جنگ کا بھرپور خطرہ امریکا کی مداخلت کے بعد ٹلا تھا۔جرمن ویب سائٹ ڈوئچے ویلے کی رپورٹ کیمطابق روئٹرز نے اس کشیدہ صورت حال سے باخبر کم از کم 5انتہائی قابل اعتماد ذرائع کے حوالے سے لکھا ہے کہ جس روز پاکستانی حکام نےہندوستانی پائلٹ ابھینندن کو گرفتار کیا تھا اور اسکی آنکھوں پر بندھی پٹی اور ہتھکڑیوں والی تصویر ہندوستان میں سوشل میڈیا پر وائرل ہو گئی تھی، اسی شام انڈیا کے قومی سلامتی کے مشیر اجیت دووال نے ایک ’’محفوظ‘‘ ٹیلی فون لائن پر پاکستانی فوج کے خفیہ ادارے آئی ایس آئی کے سربراہ عاصم منیر سے بات بھی کی تھیں۔اس گفتگو کی تفصیلات سے آگاہ مغربی سفارتی اورہندوستان حکومتی ذرائع نے بتایا کہ اجیت دووال نےپاکستانی خفیہ ایجنسی کے سربراہ عاصم منیر کو بتا دیا تھا کہ ہندوستان اپنی انسداد دہشت گردی کی کارروائیوں کے تحت پاکستان میں ان دہشت گردوں کے ٹھکانوں پر حملوں سے باز نہیں آئے گا، جو ہندوستان کے زیر انتظام کشمیر میں مسلح کارروائیاں کرتے ہیں۔ اس دوران دووال نے آئی ایس آئی کے سربراہ کو یہ بھی کہا تھا کہ ہندوسستان کی یہ جنگ صرف ان عسکریت پسند گروپوں کے خلاف ہے، جو پاکستانی سرزمین سے ہندوستان پر حملوں کیوجہ بنتے ہیں۔چند مغربی سفارتی ذرائع کے علاوہ اپنا نام ظاہر نہ کرنے کے خواہش مند ایک پاکستانی وزیر نے بھی اس امر کی تصدیق کی کہ اجیت دووال اور آئی ایس آئی کے سربراہ کے مابین گفتگو میں نئی دہلی کی طرف سے دھمکی دی گئی تھی کہ ہندوستان کم ازکم پاکستان میں 6 اہداف کو نشانہ بنا سکتا ہے۔روئٹرز کے مطابق اس پر آئی ایس آئی کے سربراہ عاصم منیر نے نہ صرف اجیت دووال کو ایسے کسی بھی حملے کی صورت میں بھرپور جوابی کارروائی کی دھمکی دی تھی بلکہ ساتھ ہی یہ بھی کہہ دیا تھا ’’اگر آپ ایک میزائل فائر کریں گے، تو ہم تین کریں گے۔ ہندوستان نے اگر کچھ بھی کیا، تو اس پر پاکستان کی طرف سے جواب تین گنا ہو گا۔‘‘واضح رہے کہ گزشتہ روز بھی ایک انڈین جاسوس ڈرون پاکستان میں داخل ہوگیا تھا جسے پاک فوج نے بروقت کارروائی کرتے ہوئے نشانہ بنا کر تباہ کر دیا تھا.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں