101

جیالوں پر تشدد، لاٹھی چارج اور گرفتاریوں پر پی پی پی نے حکومت کیخلاف اہم اعلان کر دیا

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) پی پی پی کی مرکزی رہنما نفیسہ شاہ نے کہاہے کہ گرفتاریاں ، تشدد اور لاٹھی چارچ ہمارے جیالوں کا راستہ نہیں روک سکتے۔ایک بیان میں نفیسہ شاہ نے کہاکہ جیالوں نے ڈکٹیٹروں کا مقابلہ کیا ہے، فسطائی راج سے بھی نمٹ لیں گے۔نفیسہ شاہ نے کہاکہ پرامن جیالوں پر تشدد سے حکومت کا مکروہ چہرہ سامنے آگیا۔نفیسہ شاہ نے کہاکہ عوام سڑکوں پر آئے تو حکومت کا ڈر سامنے آگیا۔نفیسہ شاہ نے کہاکہ عوامی سمندر کو رکاوٹوں سے روکنا محال ہے۔قبل ازیںپاکستان پیپلز پارٹی کے چیئر مین بلاول بھٹو زر داری اور سابق صدر آصف علی زر داری کی نیب آفس پیشی کے موقع پر جیالے سکیورٹی حصار توڑ کر نیب آفس پہنچے ،پولیس کی مزید نفری طلب کر نا پڑی، پولیس نے 30سے زائد کارکنان کو حراست میں لے لیا ۔ بدھ کو آصف علی زر داری اور بلاول بھٹو زر داری کی نیب ہیڈ کوارٹر میں پیشی کے مو قع پر پیپلزپارٹی کے کارکنان بڑی تعداد میں سیکورٹی احصار توڑ کر نیب آفس پہنچے تاہم اس موقع پر کارکنوں کو کنٹرول کر نے کیلئے پولیس کی نفر کم پڑگئی جس کے باعث نیب آفس کے باہر مزید نفری طلب کر نا پڑی ۔اس موقع پر پولیس پیپلز پارٹی کے کارکنان کے خلاف ایکشن میں دکھائی دی ۔ ذرائع کے مطابق نادرا چوک،میلوڈی فیض آباد کے تیس سے زائد کارکنان کو حراست میں لے لیا گیا ، ذرائع کے مطابق نادرا چوک پر پولیس اہلکاروں کی جانب سے کوریج کرنے والے صحافیوں کو گرفتار کرنے کی کوشش کی گئی نجی ٹی وی کے رپورٹر برہان بخاری کو گرفتار کرکے گاڑی میں ڈالنے کی دھمکیاں دی گئی ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں