47

مشہور عالم دین مفتی تقی عثمانی کی گاڑی پر فائرنگ……..شہادتوں کی خبر موصول

کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک) آدھے گھنٹے میں فائرنگ کے 2 واقعات ، دو افراد جاں بحق، دو زخمی کراچی میں نیپا چورنگی کے قریب ایک کار پر فائرنگ کے نتیجے میں دو افراد جاں بحق اور ایک زخمی ہو گیا۔پولیس نے واقعے کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا ہے کہ 2 موٹرسائیکلوں پر
سوار ملزمان نے یونیورسٹی روڈ پر نیپا چورنگی کے قریب ٹویوٹا کرولا کار ATF-908 پر فائرنگ کی جس کے نتیجے میں 2 افراد موقع پر ہی دم توڑ گئے۔پولیس کا کہنا ہے کہ جاں بحق افراد کی عمریں 25 سے 35 سال کے درمیان ہیں تاہم دونوں کی ابھی تک شناخت نہیں ہو سکی۔پولیس کے مطابق فائرنگ کا نشانہ بننے والی گاڑی دارلعلوم کورنگی کے نام پر رجسٹرڈ جس کے مہتمم مفتی تقی عثمانی ہیں ، مفتی تقی عثمانی کی ہے مگر ابتدائی طور پر مفتی صاحب گاڑی میں موجود نہیں تھے ، دوسری جانب ترجمان وزیراعلیٰ سندھ کے مطابق وزیراعلیٰ سندھ نے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے پولیس سے رپورٹ طلب کر لی ہے اور ملزمان کی فوری گرفتاری کی ہدایت کی ہے۔نرسری میں بھی فائرنگ ریسکیو ذرائع کے مطابق شاہراہ فیصل پر نرسری کے قریب بھی فائرنگ کا ایک واقعہ سامنے آیا ہے جس میں 2 افراد زخمی ہوئے ہیں۔ایک اور خبر کے مطابق کرائسٹ چر چ سانحہ میں مجموعی طور پر انچاس افراد شہید ہوئے جن میں نو پاکستانی بھی شامل ہیں تاہم آج شہداءکو النور مسجد میں خراج عقیدت پیش کیا گیا اور پہلی مرتبہ نیوزی لینڈ کے سرکاری ٹیلیویثرن اور ریڈیو پر اذان اور جمعہ کا خطبہ نشر کیا گیا ۔تفصیلات کے مطابق النور مسجد میں نماز جمعہ کے موقع پر تمام افراد نے شہدا کو خراج عقیدت پیش کرنے کیلئے 2 منٹ کی خاموشی بھی اختیار کی تاہم مسلمانوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کرتے ہوئے نیوزی لینڈ کے ایک مقامی اخبار نے انتہائی شاندار

اقدا م کر ڈالا ہے جس نے پوری مسلم دنیا کے دل جیت لیے ہیں ۔نیوزی لینڈ کے مقامی اخبار ” دی پریس ‘ ‘ نے سانحہ کرائسٹ چرچ کو ایک ہفتہ مکمل ہونے پر آج کوئی بھی خبر نشر نہیں کی بلکہ انہوں نے سفید رنگ کے بیک گراﺅنڈ پر کالے رنگ سے بڑے الفاظ میں ’ ’ سلام “ لکھا جس نے دیکھتے ہی دیکھتے پوری دنیا میں توجہ حاصل کر لی ہے اور اسے سوشل میڈیا پر تیزی کے ساتھ شیئر کیا جارہاہے ۔یاد رہے کہ پاکستان کے شہری نعیم راشد اور ان کے بیٹے طلحہ دوسرے نمازیوں کی جان بچاتے ہوئے شہید ہوئے اور دہشتگرد کا بہادری کے ساتھ مقابلہ کیا جنہیں پاکستان نے کل یوم پاکستان کے موقع پر پاکستان کے اعلیٰ سول اعزاز سے نوازنے کا اعلان بھی کر رکھاہے ۔ان کی بہادری اور جرات پر نیوزی لینڈ کی حکومت بھی عش عش کر اٹھی ہے تاہم آج ان کی میتیں اہل خانہ کے حوالے کر دی گئی ہیں ، ان کی میتوں کو پاکستان اور نیوزی لینڈ کے پرچم میں لپیٹ کر اہل خانہ کے سپر د کیا گیا جبکہ اس موقع پر انہیں نیوزی لینڈ کے جوانوں کی جانب سے خراج عقیدت بھی پیش کیا گیا ۔ تاہم آج ان کی میتیں اہل خانہ کے حوالے کر دی گئی ہیں ، ان کی میتوں کو پاکستان اور نیوزی لینڈ کے پرچم میں لپیٹ کر اہل خانہ کے سپر د کیا گیا جبکہ اس موقع پر انہیں نیوزی لینڈ کے جوانوں کی جانب سے خراج عقیدت بھی پیش کیا گیا ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں