52

مولانا فضل الرحمن کا اہم بیان زرداری اور نواز شریف کے بارے میں کیا کہے ڈالا

اسلام آباد امیرجے یو آئی مولانا فضل الرحمٰن نے کہا ہےکہ میرا نواز شریف سے رابطہ ہے نہ زرداری سے اور حکومت سے رابطے کا سوال ہی نہیں اسلئے مجھے نہیں معلوم کہ کس سے ڈیل ہورہی ہے اور ڈھیل کس کو دی جارہی ہے نہ ہی میرے علم میں یہ بات ہے کہ کون باہر جارہا ہے اور کون اندر ، حالات اس امر کی غمازی کررہے ہیں کہ تحریک انصاف کی حکومت کی رخصتی سالوں کی نہیں بلکہ مہینوں کی بات ہے۔اداروں کا یہ زعم بھی ختم ہو جائے گا کہ اگر وہ یہ سمجھتے ہیں کہ وہ جس کو اقتدار پر بٹھا دینگے وہ امور مملکت چلائے گا یہ درست نہیں ہے،حکومت نے سب کو مایوس کیا،ہمارے نزدیک معین قریشی اور عمران میں کوئی فرق نہیں، ہم بڑی دینی سیاسی قوت ہونے کی حیثیت سے حکمرانی کا حق رکھتے ہیں ۔ منگل کو اسلام آباد میں جنگ سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے ایک سوال کہ اگر دونوں بڑی جماعتوں کے قائدین ڈیل کر کے ملک سے باہر چلے جاتے ہیں اور وزیراعظم عمران خان کی حکومت ختم ہوجاتی ہے تو پھر حکومت کس کی ہوگی کے جواب میں مولانا فضل الرحمٰن نے کہا کہ آخرہمیں اتنا غیر اہم کیوں سمجھا جاتا ہے کہ اگر وہ دونوں میدان میں نہیں ہونگے تو ہم حکومت سنبھالیں گے کیا ملک بھر میں جے یو آئی کے زیر اہتمام ہونیوالے ملین مارچ اور چاروں صوبوں سمیت علاقوں میں عوام کی ہم سے وابستگی اس بات کا ثبوت نہیں ہے کہ ہم اس ملک میں ایک بڑی دینی اور سیاسی قوت ہونے کی حیثیت سے ملک میں حکمرانی کا حق رکھتے ہیں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں