85

جنوبی وزیرستان: میں جاری برف باری کی وجہ سے رابطہ سڑکیں بند لوگ گھروں میں محصور ہو کر رہ گئے

جنوبی وزیرستان (اپناٹانک نیوز) میں جاری برف باری کی وجہ سے رابطہ سڑکیں بند لوگ گھروں میں محصور ہو کر رہ گئے بجلی کا نظام مکمل طور پر معطل ہو کر رہ گیا شہریوں کو شدید پریشانی کا سا منا تفصیلات کے مطابق جنوبی وزیرستان کے مختلف علاقوں میں جاری برف باری کی وجہ سے زندگی مفلوج ہو کر رہ گئی ہے رابطہ سڑکیں بند ہو چکی ہیں اور ٹرانسپورٹ کی آمدورفت کا سلسلہ رک گیا ہے جبکہ اس کے علاوہ مذکورہ علاقوں میں غذائی اجناس کی قلت پیدا ہو چکی ہے اور شہریوں کو غذائی اجناس کے حصول میں شدید پریشانی کا سامنا ہے شدید برف باری کے باعث بجلی کے کھمبے گرنے سے علاقہ اندھیروں میں ڈوب گیا ہے اور بجلی کا نظام مکمل طور پر معطل ہو کر رہ گیا ہے جنوبی وزیرستان میں حالیہ ہونے والی برف باری نے تیس سالوں کا ریکارڈ توڑ کر رکھ دیا ہے ضلعی انتظامیہ جنوبی وزیرستان کی جانب سے برف پڑنے والے علاقوں میں رابطہ سڑکوں کو کھولنے اور بجلی کے نظام کی بحالی کے لئے تاحال کسی بھی قسم کے ااقدامات نہیں اٹھائے گئے ہیں جبکہ انتظامیہ کے حکام جنوبی وزیرستان میں فرائض سر انجام دینے کی بجائے ٹانک میں موجود ہوتے ہیں انتظامیہ کی نا اہلی کی وجہ سے برف باری میں شہریوں کو شدید پریشانی کا سا منا کرنا پڑ رہا ہے قبائلی رہنماء ملک اے ڈی خان محسود نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا ہے کہ جنوبی وزیرستان وزیرستان کے علاقہ لدھا،مکین ،کانی گرم اور بدر میں ریکارڈ برف باری ہوئی ہے برف باری والے علاقوں میں رابطہ سڑکیں بند ہو چکی ہیں اور آمدو رفت معطل ہو چکی ہے جبکہ غذائی اجناس کی قلت کی وجہ سے شہریوں کو پریشانی کا سامنا ہے اے ڈی خان محسود نے گورنر اور وزیر اعلی خیبر پختون خواہ سے مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ شہریوں کی تکلیفات کے ازالہ کے لئے اقدامات اٹھائیں اور رابطہ سڑکیں کھولنے کے لئے بھاری مشینری فوری طور علاقہ میں بھجوائیں تاکہ رابطہ سڑکوں کو آمد رفت کے لئے کھولا جا سکے انہوں نے کہا کہ برف باری دیکھنے کے لئے باہر سے آنے والے سیاحوں کو بھی شدید تکلیفات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں